jump to navigation

Kion…??? 02/08/2009

Posted by Samia in Sad Poetry.
Tags: , , , , , , , , , , ,
trackback

Hum Raat ke SayiooN se Dur kion nahi jatay
Lo Shaam Ho gaye hai,Ghar kioN nahi jatay.

Auroon Ke Zakham Dekh ker Hansti haiN jo AankheiN,
Woh Chasham AnsooN se bhar kioN nahi jatay.

Woh Shaks, Jis main NahiN pholooN Ki si Khushboo,
Patjher MaiN Woh patooN Se Jhar KioN nahi jatay.

Kehte haiN ke badlien gay Woh VeeraN ko chaman maiN,
Kerna hai Jo bhi Akhir, Ker kioN nahi jatay.

Yeah Dortay howay qadam Manzil ki Aour ‘Sami’
In Tehray RastooN per Teher KioN nahi Jatay

تبصرے»

1. جاوید گوندل ۔ بآرسیلونا ، اسپین - 02/10/2009

ہم رات کے سایوں سے ڈر کیوں نہیں جاتے
لو شام ہو گئی، گھر کیوں نہیں جاتے

گھر کو وہ لوٹتے ہیں جن کا کوئی گھر ہوتا ہے۔ اور ایسے خانماں نصیب رات کے سایوں سے نہیں ڈرا کرتے۔

2. keith - 07/25/2009

bas ek raat ka fassna tha wo raat ko khatm ho ga tha
marne ki caht main zandgi ko ruswa karna parta hain

3. SAHIL - 08/17/2009

Ghar Ki Wehshat Se Larazta Hu Magar Jany Kyu…….
Sham Hoti Hai To Ghar Jany Ko G Chahta Hai….


جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: